Jump to content
URDU FUN CLUB

All Activity

This stream auto-updates     

  1. Today
  2. شکریہ دوست ۔ ابھی اس کی آپ ڈیٹ نہیں ملے گی آج اگر نیٹ نے ساتھ دیا تو فرض کی آپ ڈیٹ پوسٹ کر پاؤں گا
  3. Start to acha h ab next.....
  4. Yesterday
  5. چلیں جی وقت ہے تو ایک مزے دار واقعہ شئیر کردیتا ہوں. میں اور میرا دوست جوہر موڑ کی ایک کال گرل جگہ پر گئے. آنٹی کا نام ندا رکھ لیں. اس سے ملاقات کیسے ہوئ یہ پھر کسی اور واقعہ میں بتاؤں گا. جوانی میں ہی اس نے بہت کچھ حاصل کرلیا. تیز سمجھ دار. ندا کی جگہ پر گئے. فلیٹ میں چوتھی منزل پر جگہ پر تھی. لڑکیاں دکھائیں جس میں سے ایک پسند آگئ. سوچ رہا ہوں کہ لڑکی کون سی تھی آجا یاد آجا یاد. ہمممممم نہیں یاد آرہا خیر جو بھی تھی میں نے کام کیا. باہر آیا. ندا کے ساتھ بیٹھ کر باتیں کرنے لگ گیا بہت عرصہ بعد ملاقات ہوئ تھی. وہ سننے والی اور سنانے والی تھی. وہ کرسی پر تھی میں اس کی ٹانگ کے ساتھ لگ کر ایسے باتیں کررہا تھا جیسے میری رشتہ دار ہو. ایسے میں ایک شخص آیا. میں نے جیسے ہی اسے دیکھا میرا کلیجہ منہ کو آگیا. وہ میرے علاقہ کا تھا جہاں میں کراچی میں رہتا ہوں. وہ باقاعدہ میرے جاننے والا نہیں تھا لیکن گزرتے چلتے ایک دوسرے کے چہرے سے شناسائ تھی. اس نے مجھے دیکھا اور طنزیہ کہا کہ حاجی صاحب ادھر کدھر. میرا دوست صورت حال کو سمجھ گیا فوراً کہا کہ جہاں آپ طواف کرنے آئے ہیں ہم بھی وہیں پھیرے لگانے آئے ہیں. طواف کی بات اس نے جلدی میں کہی جو کہا ذکر کردیا اس کا غلط مطلب نہ نکالیے گا. پیشگی معذرت . وہ مسکرا کر خاموش ہوگیا. وہ بھی کام کرچکا تھا باہر آیا کار میں بیٹھا مجھے کہا میرے ساتھ چلو میں نے کہا نہیں دوست کے ساتھ ہوں. وہ پھر چلا گیا. میں بڑا پریشان ہوا دوست نے تسلی دی اس نے کہا وہ کون سا یہاں کسی نیک کام سے آیا تھا وہ بھی اسی کام سے آیا تھا فکر مت کرو کچھ نہیں ہوتا. کچھ دنوں بعد میرا اور اس کا آمنا سامنا ہوا موڑ پر اپنے رہائشی علاقہ میں.وہ بائیک پر تھا میں پیدل . اس نے بائیک روک کر سلام کیا میں نے ہاتھ ملایا. اس نے مسکرا کر کہا پہچانا. میں نے کہا نہیں. اس نے دوبارہ یاد دلانے کی کوشش کی میں جان بوجھ کر انجان بنا اور صاف انکار کر دیا کہ میری تمہھاری اس جگہ پر ملاقات ہوئ تھی. وہ بھی ایک لمحے کو شش و پنج میں پڑگیا کہ کہیں واقعی میں تو غلط نہیں. ہا ہا.میں نے سوچا کہ اگر اقرار کرلیا تو خواہ مخواہ کی جان پہچان بنانا پڑے گی جس کا کوئ فائدہ نہیں. دوبارہ پھر کئ ماہ ملاقات نہیں ہوئ. مجھے نہیں پتا تھا کہ وہ رہتا کہاں تھا. پھر کبھی نہیں ملا. یقیناً چلے گیا سبق :- ایسی جگہوں پر بہت احتیاط کی ضرورت ہے. اتفاق کبھی بھی ہوسکتا ہے. کہیں بھی جائیں پوری تسلی کرکے جائیں. یہ نہ ہو کہ شرمندگی اٹھانی پڑے. رشتہ دوستیاں خراب ہوں.
  6. جب آنٹی کے ہاں آنا جانا کافی بڑھ گیا تو ایک اعتماد کی فضا قائم ہوگئ نام آپ شمائلہ رکھ لیں. یہ وہی آنٹی ہے جس کو ایک بار بچایا تھا جب چھاپا پڑ گیا تھا. اس سے واسطہ کیسے پڑا وہ بتادیتا ہوں ہم کال گرل جگہ دیکھنے کے لیے تگ ودو کر رہے تھے. دوست کو ایک نمبر ہاتھ لگا ہم بتائ ہوئ جگہ اسٹارگیٹ پہنچے. جب لڑکی دیکھی تو وہ تو بڈھی 50 سال کی کالی عورت نکلی. ہم نے تو انکار کردیا. جس کا گھر تھا وہ اس سے اچھی تھی. ہم نے کہا کہ ہم تو نہیں کریں گے واویلہ کرنے لگ گئ جسکا گھر تھا اس عورت نے بات کو سمجھا سمجھ دار تھی ہم نے تو کہا کہ اس نے کہا کہ 35 سال کی ہوں اور آپ خود دیکھ لیں. اس نے اسے برا بھلا کہا وہیں پر وہ لڑکی تھی جسکا نام شمائلہ ہے اس وقت کی عمر 30 کے آس پاس ہوگی. ہم نے کہا کہ اسے کرلیتے ہیں تو اسے کیا میں نے نمبر لے لیا. کرتے کرتے اس نے اپنا کام شروع کردیا. اب وہ اپنا مکان بناچکی ہے. دبئ کے بھی اس کے ٹور لگتے رہتے ہیں. بال بچے دار ہے میاں بھی ساتھ ہی ہے. اس نے ایک دفعہ اپنے گھر بلایا جو کہ بہت دور تھانام یاد نہیں آرہا لی مارکیٹ سے بھی آگے . بعد میں اس کے اپنے گھر تین چار دفعہ گیا. کام وہ ملیر کے مضافاتی علاقہ میں کرتی ہے. اس نے کہا کہ چھوٹی بچی آئ ہے کام میں نئ ہے میں نے کہا جسم میں کچھ ہے بھی اس نے کہا کہ ہاں اچھی ہے. میں وہاں پہنچ گیا سوا گھنٹہ لگ گیا جاتے ہوئے. اس کے گھر پہنچا. گھر تو گھر ہوتا پے بچوں سے ملا اس کے. بیڈ روم میں بٹھا دیا. لڑکی کے بارے میں بتانے لگی کہ کسی نے اس کی سیل توڑدی ہےاسےسیکس کا چسکا لگ گیا ہے جس نے سیل توڑی بڑی عمر کا تھا اس نے کچھ ماہ بہت چودا 15 سال عمر ہوگی پنجاب سے تھی . میں سوچنے لگ گیا کہ یار پتا نہیں کیسی ہوگی. ویسے مجھے مزاجاً چھوٹی لڑکیوں پر شہوت بہت آتی ہے اس بارے میں کسی اور واقعہ میں بتاؤں گا کہ آخر کیوں . مجھے شمائلہ آنٹی نے بتایا کہ اس کی امی یا رشتہ دار اسے لائے ہیں میں بڑا حیران ہوا کہ اپنے خون والے رشتہ داروں نے ایسا کیا. لیکن دن بدن جبزندگی کے مختلف روپ دیکھے تو اب حیرانگی نہیں ہوتی. میں ان دنوں اسپرے کے تجربات کر رہا تھا. آخری دفعہ جب اتنا وقت لیا فارغ بھی نہیں ہوا جو کہ آدھا پونا گھنٹہ پہلے اسپرے لگایا تھا تو اب ذہن میں آیا کہ 10 منٹ پہلے لگاتا ہوں اس طرح شاید فائدہ ہوجائے. میں نے آنٹی کو کہا کہ واش روم جانا ہے واش روم میں گیا. اسپرے کو صرف لنڈ کی ٹوپی پر لگایا. میں پھر کمرہ میں آگیا. لڑکی جب کمرہ میں آئ تو میری آنکھیں پھٹی کی پھٹی رہ گئیں. اس کے پستان اففففففففف. کیا سینہ تھا. ایک بھرپور سینہ .پتلی سی تنگ شرٹ پہنی تھی اور ٹراوزر. ایسے لگ رہا تھا ممے باہر آجائیں گے وہ ڈاکٹر صاحب لکھتے ہیں نہ کہ ابل پڑے بالکل ویسے ہی.قد اس کا چھوٹا تھا بال گنگھریالے . میں نے دل میں کہا واہ پرویز آج تومزے آنے والے ہیں.آنٹی چلی گئ اس سے کچھ باتیں کی. پھر ہاتھ میں لیا اس کے ہاتھ تھامے کسنگ کی اسے گلے لگایا اس کے حسین مموں کو ہاتھ لگایا دبایا . میں نے پھر اس کی شرٹ سے اندر ہاتھ ڈالا اور اس کے ننگےممے کو پکڑلیا سہلایا. افففف. لنڈ میں تو ایسی آکڑ آئ. اف. میں نے پھر اس کی شرٹ اتار دی. مموں کو دیکھ کر دنگ رہ گیا. کیا گول ممے بھرے ہوئے تراشے ہوئےسانولے سے. میں نے جی بھر کر انہیں چوما چوسا نپل جو کہ ہلکے سے ابھرے ہوئے تھے کاٹا. جتنا انہیں پیار کرسکتا تھا کیا. اس کے چھوٹے کولہوں کو دبایا ہلکی تھی اٹھا کر لٹادیا. کنڈم چڑھایا. اور لنڈ اندر ڈال دیا. چند جھٹکے لگائے چوت شروع میں تنگ محسوس ہورہی تھی پھر رواں ہوں گی. لنڈ کا اگلا حصہ مجھے سن محسوس ہورہا تھا. میں نے چند جھٹکے سکون سے لگائے. پھر نکال کر دوبارہ ممے دبائے کسنگ کی انتہائ مزہ آرہا تھا دوبارہ سے لنڈ اندر ڈال کر چند مزید جھٹکے لگائے. اس دوران اس نے کہا کہ اب مجھے بھی مزے لینے دو تم نے تو بہت لے لیا. میں حیران ہوا تو اس نے کہا تم لیٹو مجھے اوپر آنے دو. میں لیٹ گیا وہ اوپر آئ . میرا لنڈ پکڑا اپنی چوت پر رکھا آرام آرام سے پورا لنڈ اندر لے لیا. دوبارہ اوپر ہوئ پھر سے نیچے ہوکر لنڈ اندر لے لیا اسی طرح اوپر نیچے ہوکر لنڈ لینے لگی مموں کا حسین نظار تھا. لنڈ پر صحیح رگڑ لگ رہی تھی اسے بھی بے انتہا مزہ آرہا تھا مجھے ایسا لگا کہ منی آنے والی ہے. میں دوبارہ اسے لٹاکر اوپر آگیا اور کسنگ ممے دباتے ہوئے لنڈ اندر ڈال دیا. چند جھٹکے لگائے انزال کے ہوتے مزید جم کر جھٹکے لگائے اور فارغ ہوگیا. آہ ہ ہ بڑا ہی مزے دار سیکس ہوا. جاتے ہوئے اس لڑکی کی رشتہ دار پر نگاہ پڑی. سیکس اسپرے کا یہ تجربہ کامیاب رہا. 10 منٹ تک دورانیہ بڑھ گیا. بہت سکون ملا. سبق :- اسپرے کے بارے میں آپ کو پہلے ہی بتایا تھا کہ نہ استعمال کیا جائے. لوگ پھر بھی ان کے پیچھے دوڑتے ہیں وقت بڑھانے کے لیے مختلف نقصان دہ چیزیں استعمال کرتے ہیں. اگر کسی کو بہت زیادہ مسئلہ ہے وقت کا اور چالو لڑکی گرل فرینڈ کے سامنے شرمندگی سے بچنا ہے تو جس طرح میں نے استعمال کا بتایا 10 منٹ پہلے اور ٹوپی پر. پھر بھی کہوں گا کہ نہ کیا جائے. سکون دہ جگہ دیکھو لڑکی سے بھرپور وقت لو تو آپ کی ٹائمنگ اچھی ہوجائے گی. بھوپور فور پلے کیا جائے.
  7. ہمممم آپ نے خوب مزے کیے. گانڈ کو تو بخش دیتے ہا ہا ہم .آپ نے یہ بات کرکے مجھے تھوڑا حیران کیا. اس کی وجہ کیا ہے کہ کنوارہ پن ٹؤٹنے دیتی ہے جبکہ رونا بھی جاری ہوتا ہے . ڈاکٹر صاحب کیا کہتے ہیں آپ اس بارے میں؟؟؟
  8. ارے نہیں جناب۔ ہوس کی اپڈیٹ پہ کام کر رہا ہوں اس کے بعد میں اس کو بھی اپڈیٹ کرتا ہوں۔ بس ایک دو دن نکال لیں کسی طرح
  9. اج یا کل اس کی پہلی آپ ڈیٹ پوسٹ کی جائے گی مجھے امید ہے کہ آپ لوگ اس پر اپنی رائے ضرور دیجیے گا
  10. ڈاکتر بھائی کمال ہی کر دیا۔۔ وڈیرون کی عیاشیوں کی اس سے زیادہ تفصیل نہین ملی اور پھر انکی عورتون کی حوس بھی خوب جا رہی ہے۔۔ اب دیکھتے ہین فرزانہ کب باری لگواتی ہے سانول اوع نوشاد سے۔۔ کمال ہے بھائی تعریف کے الفاط نہین ہین ڈاکتر صاب ہم تو وہ منافق ہے جسے صرف اپنے نشے یعنی آپکی کہانیون سے مطلب ہے،، ہاہا۔۔ یہ صرف ایک مزاق تھا بھائی۔۔ اس بات کو سنجیدہ مت لیجنیئے گا۔۔ زبردست اور زبردست۔۔ شکریہ
  11. ڈاکتر صاب۔۔ پہلے سائٹ بند ہو گئی۔۔ پھر گوگول کیا تو نئی سائٹ کا پتہ چلا۔۔ پھر آئی ڈی ری سیٹ کی۔۔ پر آپکی اپڈیٹ نہین آئی۔۔ کیا یہ کہانی مکمل ہو چکی ہے یا قسط وار چل رہی ہے۔۔ اور اگر مکمل ہے تو اسکو کس طرح خریدا جا سکتا ہے۔۔ ویسے ہے کمال کی شکریہ بھائی جی اپنا دماغ اس سمت ڈورانے کا
  12. Last week
  13. Mera naam Harshita Singh hai. aur main delhi may rahti hoon. Aur main Guru Harkrishan Public School main 10th class ki student hoon. yeah 2017 ki baat hai. tub main 7th class may parti thi. 1 din school may function tha. aur meri 1 friend school may apnay bahi ka mobile lay kar aai pictures lanay kay liya. tu hum friends pics lay kar check kar rhy thy. phir hum nay mobile per game khailna start kar di. phir game khailty khailty hum nay mobile may 1 app deakhi. Indian sex stories ki. hum nay socha kay koi stories hoon gee. tu hum wo parnay lagay. stories kay title bohat ajeeb ajeeb thy humko samaj nhi aa rhi thi. 1 title tha maria kutty say chudi. hum wo parny lagay. per humko uski kuch samaj he nhi aai. wo aur dusri stories bhi bohat bore lagi humko. hamari 1 dost ki bari behan aai. usko pata chala kay hamaray pass mobile hai aur hum pics lay rhy hain. tu wo pics deakhnay ai. hum nay usko stories ka bola kay inka kya matlab hai. bohat he bore hai. wo stories deakh kar gussa hoi aur boli iss ko delete karoo aur main tum sub ki mummy ko bolo gee kay tum yeah gandi gandi stories party hoo. hum nay wo delete kar di aur function may busy hoo gay. meray papa thoray sakth hain. tu main dil say dar bhi rhi thi kay aggar didi ny mummy ko bola tu mujhy papa say maar paray gee. isi tara bohat din hoo gay aur kuch naa huwa. hum bhi yeah baat bool gay. bohat time bad school say chutiyaan thi. main ghar per thi. youtube per movies deakh rhi thi. mujhy wo stories wali baat yaad aai. aur main nay google per stories search ki. mujhy uder bohat si stories mili. kuch facebook kay pages bhi thy. main nay facebook per unko check kiya. uder stories bhi thi aur pics bhi thi girls & boys ki. aur kuch aisi cartoon wali pics bhi thi jis may larki larka nangy thy aur kuch kar rhy thy. mujhy unki samaj nhi aai. main nay forn wo band kai di kay kahi koi deakh naa lay. uss din main puri raat uskay baray may sochti rhi. mujhy neend nhi aa rhi thi. main nay life may 1st time kisi larkay ko nanga deakha tha. yeah he sochty huway main soo gai. kuch din bad school open hoo gay. main nay school jaa kar friends ko stories aur pics ka bola. kuch din bad meri 1 dusri dost nay humko bola kay uss nay 1 sex ki movie deakhi hai. hum nay bohat intrest lay kar uski baaten suni. ab hum sub ka dil tha wo movie deakhnay ko. per humko mil nhi rhi thi. isi tara hoty hoty hum 9th may aa gay. phir 1 din humko 1 movie mil he gai. hum bohat heran thy kay kya aisa bhi hota hai. mujhy tu believe he nhi hoo rha tha kay meray mummy papa nay bhi aisa he kiya hoo gaa tu main iss dunya may aai. kuch din bad meri 1 friend nay bola kay aisi movies net per bhi hain. phir main wo movies net per deakhni lagi. aur stories parnay lagi. ab mujhy stories ki bilkul theak say samaj aanay lagi. hum sub friends nay 1 common facebook ID bana liya aur sub uss facebook ID say online hoo kar stories parti thi. hum apna real facebook nhi use karty thy kay family may kisi ko pata naa chal jay. ab main almost her raat ko koi naa koi story parti. mujhy stories par kar bohat maza aata tha. movies kabi kabi deakhti thi kyu kay movies deakhny may khatra tha kay koi deakh naa lay. tab tak meri 2 friends ka boyfriend ban chuka thy. wo school aa kar unki baaten karti thi. ab mera bhi dil karta tha kay mera bhi koi boyfriend hoo. main jub story parti thi tu jo story may hota tha tu mujhy aisa lagta tha wo sub meray saath hoo rha hai. main dewani hoo chuki thi. meri friends apnay boyfriend say jub mil kar aati tu batati thi kay kaisy uss nay unko touch kiya. unho nay kaisy kiss ki ect ect.. main bohat jealous feel karti thi. mera school sirf girls ka hai boys nhi hain. aur main tution bhi nhi jati thi. ghar may mummy say parti thi. isi liya abhi tak mujhy koi boyfriend nhi mila tha. baap beti aur bahi behan ki stories par kar mera dil karta tha kay papa he meray saath sex kar lay. per main unko bolnay say darti thi. rooz sochti thi main papa ko kaisy bolon. facebook per stories par kar idea lagati thi. pet meri himmat nhi thi hoti unko bolnay ko. aur mera bahi bhi chota tha usko bolnay ka faida bhi nhi thi. sirf 7 saal ka bacha tha wo. 1 din main nay facebook per 1 sex story page per message kar kay pucha kay yeah joo larkiyaan apnay papa say sex karti hain wo unko kaisy bolti hain? tu mujhy uss larkay nay bola kay papa beti ki stories 100% jhooti hoti hain. koi bhi papa apni beti say sex nhi karta. aur naa he koi bahi apni behan say karta hai. tu main soch may par gai kay ab kya karoon. mujhy tu koi larka bhi purpose nhi kar rha. facebook per cousin ki bhi stories hoti thi. per mujhy tu kisi cousin nay bhi purpose nhi kiya. Ab tu main sochny lage kay kash koi mera rape he kar dy. Main tu rape honay kay liya bhi tyar hoo gai. Per mujhy tu shayed koi rape bhi nhi karna chata tha. Main sex kay liya pagal hoo rhi thi. Phir meri eak dost nay bola kay main fingering he kar loo jub tak mujhy koi larka nhi milta. Uss raat main nay fingering ki per mujhy maza nhi aaya. Bohat ajeeb bhi laga. Mujhy tu kisi larky say sex karna tha. Fingering say mujhy maza nhi mil rha tha. Aisa he din guzarty rhy aur main sex kay liya tarapti rhi. kuch din bad meri 1 dost nay bataya kay ab wo apnay boyfriend ko touch he nhi karti balkay unho nay sex bhi kar liya hai. aur uss nay mujhe bola kay sex ki tu usko bohat pain hoi thi per joo maza usko boyfriend ka nichey say chuse kar aaya aur uska pani pee kar aaya hai wo bata nhi sakti. uski baaten sun kar main sub kay samnay roo pari. kyu kay main koi badsurat larki nhi thi. meri shakal theak thi. per mujhy koi boyfriend mil he nhi rha tha. uss raat main jealousi ki waja say soo nhi saki. mujh say bardash nhi hoo rha tha kay meri dost nay tu sex bhi kar liya per mujhy abhi tak koi boyfriend he nhi mila. uss raat pata nhi mujhy kya hoo gaya kay main apnay bahi kay pass jaa kar uski zip kholi aur usko nichay say chusnay lagi. woo soo rha tha usko pata nhi chala. kuch time tak chusti rhi aur uska pani he nhi nikla. phir main nay chor diya aur apni jaga per aa kar late gai. Phir kuch din bad meri dusri dost nay bhi sex kar liya. ab tu main full jealous hoo rhi thi. kyu kay group may sirf main he 1 larki thi jiska abhi tak koi boyfriend nhi tha. ab main nay socha kay aggar main aisi he rhi tu mujhy kabi bhi koi boyfriend nhi milay gaa. phir main nay mummy ko bolna shuru kar diya kay mujhy bhi tution jana hai. study bohat muskil hai. 10 class hai board ka exam hai. main soch rhi thi uder jao jider sub friends jati hain. uder boys bhi aaty thy. per mummy nay mujhy maadem kay pass baija jo sirf girls ko he tution dayti thi. mera yeah plan bhi fail hoo gaya. main tu jealousi say pagal he hoo rhi thi. ab tu main friends say larkoon ki baaten puchti aur stories he parti thi. kuch samaj nhi aa rha tha kya karoon. 1 dafa main aur mummy kuch dresses lanay market gay. uder 1 larkay nay mujhy 1 paper per kuch likh kar diya. main nay foran wo paper chupa liya. ghar aa kar deakha tu likha tha call me aur uska saath may uska number tha. per wo larka age sy zeyada tha uski age bhi 30 saal thi. main 15 saal ki aur wo 30 saal ka. suba school jaa kar main nay dosto ko bola tu sub nay bola shukar karoo tumko koi mila tu. Main nay unko bola kay nhi mujhe bf wo chiay joo17 18 saal ka hoo. Yeah tu itni age ka hai. tu sub nay bola theak hai usko koi reply nhi karoo aur koi dusra deakh loo. Per mujhy koi dusra mil bhi nhi raha tha. Isi tara kuch din aur guzar gay aur main pagal hoti rhi. phir kuch din bad main nay eak raat ko chup kar usko call ki aur hamari baaten start hoo gai. hum ab rooz video call per baaten karty. phir hum nay milnay ka program banaya. ab main aisa karti kay main ghar say school ka bol kar jati aur hum kabi park may milty kabi kisi shopping mall may chalay jatay yaa cinema may jaa kar movie deakhty. 2 3 week bad jub hum cinema may movie deakh rhy thy tu uss nay mujhy kiss karnay ka bola. main tu kab say soch rhi thi yeah sub karnay ko. main nay usko darty darty kiss ki kay koi deakh naa lay. per mujhy sharam aa rhi thi aur dusra mujhy kiss karni aati bhi nhi thi. main nay kabi kisi ko kiss kiya bhi jo nhi tha. Sirf movies may deakha tha aur mujhy samaj nhi aa rhi thi french kiss kaisy karty hain. wo bohat heran huwa kay mujhy tu kiss karni bhi nhi aati. ab hum jub bhi milty wo mujhy kiss karta aur mujhy upper aur nichey kaproon kay upper say he touch karta. mujhy bohat acha lagta. phir 1 din uss nay bola main tumhari panty kay andar haat dal kar touch karna chata hoon. mera dil tu bohat tha per mujhy sharam aa rhi thi. main sharam say usko mana kar rhi thi per uss nay mujhy mana he liya. phir jub uss nay panty kay andar haat dal kar mujhy touch kiya tu main tu jaisy pagal he hoo gai. Kisi bhi larkay nay aaj mujhy 1st time aisy touch kiya tha. main bata nhi sakti mujhy kitna maza aa rha tha. jis kay liya main kab say tarap rhi thi aaj wo din aa he gaya tha jub mujhy koi larka aisy touch kar rha tha. main bohat khush thi. phir uss nay bola kay main usko bhi touch karoon tu uss nay apni zip khol kar mera haat ander daal diya. main nay uska pakar liya. main nay iss say phalay sirf apnay bahi ka he pakra tha jub wo soo rha tha. uska tu chota sa tha yeah bohat he bara tha. mujhy acha tu bohat laga per main yeah soch kar daar rhi thi kay main iss say kaisy sex karoo gee. kyu kay main nay stories may para tha kay bohat pain hoti hai aur blood bhi nikalta hai. main uska pakar kar bohat dari hoi thi. ab hum jub bhi milty wo mujhy andar haat daal kar kabi nichey touch karta kabi meray breasts ko. aur main usko zip kay andar haat daal kar touch karti. 1 din main usko touch kar rhi thi tu mera dil kiya kay main usko nichay kiss karoo. main nay uss say pucha kya main isko kiss kar loon woo bola haan kar loo. main nay usko 2 3 kiss ki aur pata nhi mujhy kya huwa kay main nay usko muh may daal kar chusnay lagi. mera tu jaisy khud per control he nhi thi. usko bhi shayed maza aanay laga aur uss nay meray saar per haat rakh kar mera saar nichay push karnay laga. mujhy pata nhi kya hoo gaya aur main usko pagaloon ki tara chusnay lagi. mujhy tub pata chala jub uska pani nikla. garam garam pani jub nikla tu mujhy wo maza aaya kay main bata nhi sakti. mujhy aisi laga kay dunya may main aaj he aai hoon. mujhy meri friend ki baat yaad aa gai kay pani jub mumh may niklta hai tu bohat maza aata hai. ab hum jub bhi milty hum aisy he karty. ab meray boyfriend nay mujhy sex kay liya bolna start kar diya. mera dil tu bohat karta tha per main darti bhi thi kay mujhy bohat dard hoo gaa. kyu kay uska bohat bara tha. main nay apni dono friends say pucha jinho nay sex kar liya huwa tha. unho nay mujhy samjaya kay chahy tum 5 saal kay bachy say bhi sex karoo 1st time tumko daard hoo gaa aur blood bhi aay gaa. tum daroo nhi aur sex ko enjoy karoo. unkay samjanay say main samaj gai. main nay apnay boyfriend ko bol diya kay theak hai hum sex karty hain. ab masla yeah tha kay hum sex kider karay. meri age ki waja say wo mujhy kisi hotel may bhi nhi lay kar jaa sakta tha aur naa he wo meray ghar aa sakta tha aur naa mujhy apnay ghar lay kar jaa sakta tha. Maa usko bolny lagi tum mujhe apnay ghar kyu nhi ly jaa rhy. Mujhe apni family sy milwao. Shadi ka bad bhi mujhe ider he aana ha tu acha ha tumhari family mujhe abhi mil ly aur hum eak dusry ko jaan lay. Tu uss ny mujhe bola ka uss ny meray pyar ki waja sy mujh sy jhoot bola tha, wo married ha aur uska 2 bachy hain. Aur uski age bhi 35 years ha. Uski yeah baat sun kr mujhy bohat shock laga. Ma ny uss sy baat krna he chor diya.. ma usko rooz yaad krti thi aur bohat roti thi. Mujhe uss sy bohat pyar hoo gaya tha, ab ma us sy dur nhi rah skti thi.2 months tak ma ny uss sy koi baat nhi ki. Wo mujhe rooz phone krta. Mujhe sy maafi manghta. Mujh sy shadi ka waday krta. Aur such tu yeah tha ka ab ma bhi uss sy dur nhi rah skti thi. Phir 2 months bad meri uss sy wapis baaten start hoo gai aur hum ny sex ka plan bana liya. hoty hoty 1 month aur ho gaya aur humko koi safe jaga nhi mili rhi thi. wo park yaa car ma sex ka bol rha tha kay udder chup ker sex kar laty hain. per mujhy kisi safe place per sex karna tha. phir meray boyfriend nay apnay 1 dost ko help kay liya bola. uss nay bolo kay hum uss kay ghar kar sakty hain per usko bhi meray saath sex karna hai. meray boyfriend nay mujhy bola tu main nay mana kar diya kay main kisi dusray say nhi karoo gee. mera boyfriend mujhy manata rha per main nhi mani. phir wo mujh say naraz hoo gaya. main bohat rooi. main usko bohat pyar karti thi. phir kuch din bad jub mujh say raha nhi gaya tu main nay uski baat maan li kay main uss kay dost say sex kay liya ready hoon. tu uskay dost nay bola jub uski wife apni ma aka ghar jay gee tu hum uss din kr lay. Eak din uski wife chali gay aur uss nay humko bola. Dusray din main suba uth kar nahai. nichay say saray baal saaf kiya. achi tara tyar hoi. aur main ghar say tu school ka bol kar gai per uder say apnay boyfriend kay saath uskay dost kay ghar chali gai. main dil may bohat khush bhi thi kay aaj main sex karoo gee aur mujhy daar bhi laga rha tha kay pata nhi main daard bardash kar pao gee yaa nhi aur pata nhi uska dost meray saath kya karay gaa. jub hum uskay ghar aay tu wo bola phalay usko sex karna hai. main nay inkar kar diya kay main phalay apnay boyfriend kay saath sex karoo gee. wo nhi maan rha tha. bohat muskil say mana. phir wo humko room may chor kar bahir chala gaya. hum dono nay phalay kiss kiya. aaj main bina kisi daar kay kiss kar rhi thi. aaj ka maza he alag tha. phalay tu bss yeah he daar hota tha kay koi deakh naa lay. phir hum nay apnay apnay kapray uttar diya. aaj main nay 1st time usko bina kaproon kay deakha tha. aur main khud bhi nangi hoo kar bohat sharma rhi thi. phir uss nay mujhy sub jaga per touch karna shoru kar diya. mujhy maza aa rha tha. kabi wo meray breast chusta kabi kiss karta aur kabi mujhy nichy haat lagata. main bhi uska nichay say pakar rhi thi aur usko lips per kiss kar rhi thi. phir uss nay mujhy nichy say chatna start kar diya. aaj 1st time wo aisa kar rha tha. main nay aisa sirf movies may he deakha tha yaa stories may parha tha. yeah maza mujhy phalay kabi nhi mila tha. phir uss nay mujhy aisa litaya kay wo mujhy nichay say chat rha tha aur main usko chus rhi thi. phir wo bola kay main sex kay liya ready hoon kya. main sharam say kuch nhi boli. aur haaton say apna chara chupa liya. main dil may bohat daar rhi thi kay pata nhi kya hoo gaa. par main nay usko kuch nhi bola. phir jub uss nay sex karna start kiya tu mera tu daard say bura haal tha. abhi uss nay andar he kiya tha kay mujhy sy daard bardash say bahir hoo raha tha. main usko bol rhi thi bas karoo wo bola 2 yaa 3 mins may uska pani nikal rha hai main thora sa bardash karoo. per mujh say bardash nhi hoo rhi tha. sath he uska pani nikal gaya. jub garam garam pani meray ander nikla tu mujhy thora aram mila. bari muskil say main nay usko 5 mins tak bardash kiya. jub uss nay bahir nikla tu main nay deakha kay mera blood nikla huwa hai. main nay blood saaf kiya aur foran kapray pehan liya. usko abhi aur sex karna tha per meri himmat nhi thi. mujhy bohat daard hoo rhi thi. uss nay aur sex kay liya bohat bola per main nhi mani. uskay dost nay bhi mujhy bohat bola per main nhi mani. mujhy itni dard hoo rhi thi kay main maan he nhi rhi thi. unho nay bola 2 3 hours tak daard kam hoo jay gaa tu phir karlay gaa. main nay ok bola per mera daard kaam he nhi huwa. main school khatam honay tak yeah wada kar kay ghar aa gai kay ab main Monday ko dono say sex karoo gee tub tak mera daard bhi khatam hoo jay gaa. Sunday ko meray boyfriend nay mujhy kal aanay kay liya bola per main nay daard ka bahana bna kar mana kar diya. kyu kay mujhy pata tha kay uska dost bhi meray saath sex karay gaa aur mujhy uss kay dost say nhi karna tha. phir uski wife ghar wapis aa gai aur uss nay bolna chor diya. ab main wait kar rhi hoon kay koi aisa chance milay kay main phir say apnay boyfriend say he sex karoon. meri friends bolti hain kay ab mujhy dard nhi hoo gaa. ab sochti hoon kay aisa he hoo aur mujhy daard naa hoo maza aay jaisy meri friends layti hain. Aur wo apni wife ko chor kr sirf mujhr apni wife bana ly. yeah hai meri story joo main sub say share karna chati hoon..
  14. Waoo great yar kia zaberdast update mari hai uffff sex to sex aur dosti b esi jesy hum novals aur films main dakhty hain but u r very lucky k ap ko itne mukhlis dost mily baqi sex stories main sex timing aur aur larkion ka ana Jana to bas ............... Thanks itne dinno bad itne lambi update k ly. Umeed ha k ap jald he fit ho ker dobara sy apne mulkh ka nam roshan Karen gay games mai sex mai nahe.......hahaaha Next update ki umeed b jald he pori Karen gay ap
  15. اس عمر کا عشق بھی بڑا خطرناک ہوتا ہے لیکن آپ کے کیس میں آپکے پاس صائمہ کی صورت میں ایک مستقل پھدی میسر تھی ورنہ اس کا اس طرح سے چھوڑ جانا آپ کے لئے بہت مشکل ہو جاتا. کنواری لڑکی کے ساتھ سیکس واقعی میں مزے سے زیادہ ندامت اور شرمندگی کا احساس ہوتا ہے اور لگتا ہے کہ پتا نہیں آپ لڑکی پر کتنا ظلم کر رہے ہو لیکن حقیقت میں بہت سی لڑکیاں یہی چاہ رہی ہوتی ہیں کہ ان کے رونے دھونے اور روکنے کے باوجود لڑکا اپنا کام مکمل کر لے.. بس اس میں یہ والی فیلنگ "کہ میں ہوں وہ پہلا جس کو اس لڑکی نے دی ہے" بیسٹ ہے..
  16. یہ تو میں نے اس سے پہلی ملاقات کا واقعہ بتایا ہے جب اس کو لن کے درشن کراے تھے. اس کے بعد تو یہ سلسلہ چل پڑا تھا اور کبھی جوہر ٹاؤن کی سنسان گلیوں میں تو کبھی ویلنشیا ٹاؤن کی ویران سڑکوں پر اور کبھی جلو پارک میں.. جہاں جہاں موقع ملا ممے بھی چوسے، سیکس بھی کیا بلکہ اس کی گانڈ بھی ماری.. اس کی آگے پیچھے کی سیل میں نے ہی توڑی تھی.
  17. ہمممم. نوجوانی کی عمر میں کئ باتیں بہت عجیب جو مشہور ہوئ ہوتی ہیں جیسا آپ نے کہا کہ جلد از جلد لے لو ورنہ ہاتھ سے نکل جائے گی . جب کوئ چیز میسر نہ ہو تو اس کی قدر ہوتی ہے میں نے کچھ سے تعلق بڑھا نہیں پایا ضد کی وجہ سے. آج افسوس ہوتا ہے, کسی لڑکی سے جیسا تعلق ہے سیکس تک اگر بات پہنچ گئ ہے تو کبھی بھی تعلق نہ توڑو کبھی نہ کبھی ضرورت پڑ سکتی ہے جنسی طلب جب حد سے بڑھ جائے تو مسائل ہوجاتے ہیں
  18. ٹیچر کے گھر کوئی نہیں تھا اور کوئی آنے والا بھی نہیں تھا تو کوئی خاص ڈر نہیں تھا۔ وہ اب ایک ڈاکٹر ہے اور شادی شدہ ہے۔ اس کے نام کا بورڈ راستے میں پڑتا ہے۔ ویسے بھی اس سے تعلق خوشگوار انداز میں ختم نہیں ہوا تھا۔ اس نے اس واقعے کے بعد کبھی رابطہ نہیں کیا۔ میں نے کوشش کی مگر نہیں ہوا اور اس نے جان بوجھ کر اس کو ایک بری یاد سمجھ کر نظرانداز کیا ہو گا۔ اسی لیے ان نے مکمل قطع تعلق کر لیا۔ کچھ ان دنوں میں کسی ایسی لڑکی کی لینے کا جنون بھی ہوتا تھا جو بالکل پاک صاف ہو۔بڑا عرصہ خوشی بھی رہی کہ میں نے کسی کی سیل توڑی ہے اور دکھ بھی رہا کہ ناحق اس کی سیل توڑی۔ اس چکر میں اس کے تعلق بھی گیا۔ نہ کرتا کچھ عرصہ، کچھ وقت صائمہ پہ ہی گزارا کر لیتا۔ مگر اس دور میں یار دوستوں سے یہی سنا تھا کہ اگر نہیں لو گے تو بچی نکل جائے گی۔ اس لیے جلد از جلد لے لو۔لڑکی قابو میں رہے گی۔ یہ بات بکواس تھی جس پہ اکثر لڑکے یقین کرتے تھے۔
  19. ہر کسی کی اپنی پسند ہوتی ہے مجھے کم گو پسند ہے جو خاموش ہو شرم ہو اس کے اندر جھجھک ہو. ثنا کا جو آپ نے تفصیل سے واقعہ شئیر کیا. کمال. بڑی ہمت والے ہیں ڈاکٹر صاحب آپ کہ ٹیچر کے گھر پر ہی سیل توڑی اور آپ نے محسوس بھی کیا واؤووو. روہانسا ہونا منانا راضی کرنا پھر ڈالنے کی تگ ودو کرنا واہ ہ ہ .دوبارہ پلٹ کر نہیں آئ حیرت ہے. آپ نے بالکل ٹھیک کہا کہ بس ایک احساس ہوتا ہے کہ پہلامرد میں ہوں جس کی لی ہے ورنہ چوتوں میں تو کوئ فرق نہیں . صحیح مزہ تو جب ہی آتا ہے کہ جب روانی سے لنڈ اندر باہر جارہا ہو. میں نے تو بہت عرصہ پہلے کنڈم کے بغیر پانچ یا چھ بارسیکس کیا ہوگا تو اب تو وہ چوت لنڈ کی رگڑ کا احساس ہی یاد نہیں.کنوارہ پن ٹوٹنا پھر رفتہ رفتہ چوت کا کھلنا شادی کے بعد بیگم کے ساتھ ٹھیک ہے. ہاں ایسی گرل فرینڈ جس کا کنوارہ پن توڑنے کے بعد بھی آپ اگر مسلسل سیکس جاری رہے تو اچھا ہے. اس کا کلینک ہے مطلب وہ ڈاکٹر صاحب. کبھی دل نہیں کیا کہ اس سے ملا جائے. ویسے اچھا ہے جو گزر گیا جانے دیا
  20. اس کو ناپسند کرنے کی وجہ اس کا دیہاتی ہونا تھا اور بالکل بھی بات نہ کرنا۔ جبکہ میں جس اکیڈمی یا سکول میں جاتا تھا، وہاں سبھی ماڈرن پڑھی لکھی لڑکیاں ہوتی تھیں تو پسند کا معیار الگ تھا۔ شکل بری نہیں تھی مگر وہ بالکل ہی سادہ تھی اور لباس بھی بالکل ہی سادہ ہوتا تھا۔ میں ان پہ بھی سمجھوتہ کر لیتا اگر وہ باتیں کرتی۔ تھوڑی ناز و ادا کا مظاہرہ کرتی یا تھوڑا نخرہ تھوڑا رسپانس دیتی۔ مگر وہ بس لیٹی رہتی اور جب میں ہٹ جاتا تو اٹھ کر کپڑے پہنتی اور چلی جاتی۔ میں نے پہلا کنوارہ پن اسی دور میں توڑا تھا جب صائمہ کی لیا کرتا تھا۔ صائمہ کی لینے سے مجھ میں لڑکی پہ پیش قدمی کرنے کا حوصلہ آنے لگا۔ میں نے کوششیں کیں اور کامیابی مل گئی۔ جن میں سے ایک تو صائمہ کے بھائی کی سالی تھی اس کی ملی۔وہ بالکل ہی فارغ اور نہایت بدتمیز لڑکی تھی۔ جس کی لینے کے بعد الٹا میں بدمزا ہوا۔ دوسری ایک اکیڈمی کی لڑکی کی ملی۔ اس کا نام ہم ثنا رکھ لیتے ہیں۔ ہوا کچھ یوں کہ میں اکیڈمی میں پڑھتا تھا اور فارغ ہو گیا تھا۔ کورس مکمل تھا بس سوچا کہ ٹیچرز کو گھر پہ ہی صرف ٹیسٹ دے دیا کروں گا۔ اس کے لیے میں نے کیمسٹری کے سر سے بات کی۔ انھوں نے مجھے ایک وقت بتا دیا کہ اس وقت اکیڈمی کی بجائے ان کے گھر آ جایا کروں۔ میں اس وقت جانے لگا، وہ مجھے ٹیسٹ لکھوا دیتے اور چلے جاتے۔ میں ٹیسٹ لکھتا اور رکھ جاتا اور اگلے دن وہ چیک ہو کر مل جاتا۔ جس وقت میں پڑھنے جاتا تھا اسی وقت ایک نقاب پوش لڑکی بھی آتی تھی جس کا بعد میں معلوم ہوا کہ نام ثنا تھا۔وہ ان کی پڑوسن تھی اور مفت میں فزکس اور کیمسٹری پڑھتی تھی۔ تین چار دن تو ثنا سے بالکل بات تو دور نظریں بھی نہ ملائیں۔ ایک دن میں گیا تو سر نہیں تھے اور ثنا موجود تھی۔ سر کی بیوی نے کہا کہ بیٹا یہ نمریکل آتا ہے؟ میں نے کہا ؛ ہاں ۔ تو انھوں نے کہا کہ ثنا کو سمجھا دو۔ میں نے ثنا کو سمجھا دیا۔ اس کے بعد اکثر وہ مجھ سے کوئی نہ کوئی سوال پوچھنے لگی۔ میں ویسے ہی پڑھائی میں بہت اچھا تھا کچھ اس کے سلیبس کی تیاری بھی کر کے جاتا تھا۔ یوں اس کو ایک قسم کا میں نے پڑھانا شروع کر دیا۔ یہیں سے باتیں ہوتے ہوتے ہی میں نے اس کو اپنا پی ٹی سی ایل نمبر دے دیا۔ ایک دن لائیٹ چلی گئی تو میں نے ہاتھ پکڑ لیا تو وہ مائنڈ کر گئی۔ میں نے بھی غصہ کیا اور کہا کہ اگر تم سے اتنا نہیں ہوتا تو مجھ سے بات ہی مت کیا کرو۔ اس نے مجھے رات کو کال کی اور کہنے لگی کہ اچھا !سوری اب نہیں منع کروں گی۔ اس کی اور میری فون پہ بات شروع ہو گئی اور یہیں سے بڑی تیزی سے بات کس کرنے تک پہنچ گئی۔فون پہ ہی پیار محبت کے وعدے ہونے لگے۔ ایک اہم بات یہ ہوئی کہ ان دنوں میں نے صائمہ کی لینی بالکل ترک کر دی تھی۔ ایک دن میں سر کے گھر گیا تو معلوم ہوا کہ سر کے محلے میں فوتگی ہو گئی ہے اور ثنا اکیلی ہے، بس یہ بتانے کے لیے کہ آج چھٹی ہے، کیونکہ سر کی وائف گھر پہ نہیں ہیں۔ مجھے موقع مل گیا اور میں نے پہلے تو کس وغیرہ کی اور پھر اسے کہا کہ سیکس کرتے ہیں۔ اس نے بہت منع کیا مگر میں نے اس کو بڑی مشکل سے راضی کر لیا۔حیرت اس کی تھی کہ اس کو سیکس سے کوئی مسلئہ نہیں تھا وہ کنوارہ پن نہیں کھونا چاہتی تھی۔وہ یہاں تک بولی کہ اوپر رکھ لینا، اندر مت اتارنا۔مگر یہ کیسے ممکن تھا؟قمیض تو اس نے بنا کسی دقت اتروا لی بس شلوار کے معاملے میں اس نے بہت مزاحمت کی۔بار بار روہانسی ہو جاتی، مجھے یہ تھا کہ پہلی بار کوئی ایسی ملی ہے جو معیار کے مطابق ہے۔باقاعدہ پیار محبت والا سین ہے اور گرل فرینڈ کہلائی جا سکتی ہے۔ میں نے اس کی تنگ اور کسی ہوئی چوت پہ لن رکھا تو مجھے لگا کہ جیسے اس میں گھسے گا ہی نہیں کیونکہ وہ خاصی تنگ تھی اور کئی کوششوں کے بعد گھسا، وہ بھی تب جب وہ مکمل گیلی ہو گئی۔ میں نے پردہ بکارت بھی پہلی بار دیکھا تھا۔وہ کنواری تھی اور پہلی بار میں نے کسی لڑکی کی سیل توڑی۔ یقین مانیں تو بالکل بھی اچھا نہیں لگا۔ لڑکی کا خون دیکھنا،اس کا رونا دھونا،درد سے تڑپنا،برا بھلا کہنا، ناراض ہونا اور خود لن کو بھی زور لگانے کی وجہ سے جلن اور تکلیف کا احساس ہونا۔ مگر مجھے پردہ پھٹنے والے جھٹکے کی فیلنگ صاف محسوس ہوئی تھی اور اس جھٹکے سے اس کا رونا اور بلکنا بھی یاد ہے۔میں بھی جلد فارغ ہوا اور جان بوجھ کر میں نے کوشش کی کہ جلد چھوٹ جاؤں کیونکہ اس نے رو رو کر برا حال کر لیا تھا۔ جب میں فارغ ہوا تو وہ بہت سخت ناراض ہوئی اور اس کو چپ کروانے میں بہت دیر لگی۔ میں خود بھی ڈر گیا تھا کہ اب کیا ہو گا۔اس کا خون رک ہی نہیں رہا تھا۔وہ دھو کر آتی تو پھر سے خون نکل آتا۔ بہرحال یہ بالکل بھی اچھا سیکس ثابت نہ ہوا اور سب سے بری بات یہ ہوئی کہ اس نے سرے سے قطع تعلق کر لیا اور میری اب تک اس سے دوبارہ ملاقات نہیں ہو سکی۔ حالانکہ مجھے معلوم ہے کہ وہ کہاں رہتی ہے اور کہاں اس کا کلینک ہے۔اس کے نام کا بورڈ بھی گزرتے مجھے دکھائی دیتا ہے۔ میں نے سب سے پہلے سیکس کہانی اسی کے متعلق لکھی تھی۔ وہ دس سال پہلے ٹیوشن سیکس کے نام سے پوسٹ کی تھی۔ ذاتی طور پہ میں نے کنواری لڑکی کے ساتھ کو خاص انجوائے نہیں کیا۔ جب جب بھی کیا۔ ایک نفسیاتی احساس برتری تو ہوتا ہے کہ اس لڑکی کا پہلا مرد میں ہوں مگر اس کے علاوہ کوئی خاص جنسی لطف نہیں ملتا۔ بس نارمل سا ہی سیکس ہوتا ہے اور لڑکی کا رسپانس بھی بہت اچھا نہیں ہوتا۔ تین چار بار کرنے کے بعد جا کر وہ کچھ نارمل ہوتی ہے۔
  21. سر جی آپ بڑے خوشقسمت ہیں کہ ایسے وقت میں آپ کو صائمہ کی چوت میسر تھی. پسند تو نہیں تھی لیکن ابھرتی نوجوانی میں مٹھ مارنے سے بہتر ہے کہ چوت مل جائے. میرا دوست کہتا ہے کہ شکل اگر پسند نہیں آرہی تو منہ پر ڈالو کپڑا اور چود ڈالو ہا ہا
  22. جی بلکل ۔ اب یقین کرنا یا نہ کرنا آپ پر ہے ویسے آپ کیوں اتنا پوچھ رہی ہو کہیں ۔۔۔۔۔۔
  23. ہممم اچھا. اپنے واقعات میں جن کا آپ نے کنوارہ پن توڑا تفصیل سے ذکر کیجیے گا دل چسپی ہوگی اور سیکھنے کو بھی ملے گا کیوں کہ مجھے یہ چانس اب تک نہیں ملا. چوت اگر تنگ ہو تو مزہ تو آتا ہی ہے لیکن چار پانچ جھٹکوں میں منی نکل جاتا ہے . کئ ایسے بھی واقعات سننے کو ملے ہیں جن کا سیکس تجربہ نہیں تھا جنسی طور پر مشتعل تھےشادی کی رات اندر ڈالتے ڈالتے فارغ ہوگئے اندر جا ہی نہیں سکا.
  1. Load more activity
×
×
  • Create New...