Jump to content
URDU FUN CLUB
Parvez

سیکس پر مبنی زندگی کے حقیقی واقعات

Recommended Posts

السلام علیکم دوستوں کیا حال ہیں امید ہے خیریت سے ہوں گے. میں ایک نیا تھریڈ شروع کررہا ہوں,  نام سے آپ کو کچھ کچھ واضح ہوگیا ہوگا.  آپ نے زندگی میں جو بھی سیکس کیا اسے یہاں شیئر کریں.  میں اسے دو حصوں میں تقسیم کرتا ہوں 

شب عروسی/شادی کی پہلی رات: یہ ان دوستوں کے لیے ہے جو شادی شدہ   ہیں.  اگر لڑکی/عورت ہے تو وہ اپنے شوہر کے متعلق بتائے کہ کیسے سیکس کیا کیا باتیں ہوئیں شروعات کیسے ہوئ کیا تحفہ دیا کیا بلنڈر ہوا آیا شوہر اس کے توقعات پر پورا اترا یا نہیں.  آرگزم حاصل ہوا یا نہیں.  میاں ڈالنے سے پہلے تو فارغ نہیں ہوگیا غرض شب عروسی/سوہاگ رات کی پوری منظر کشی ہو. جو ذکر کرے اس میں جھوٹ شامل نہ ہو اسی طرح اگرمرد/لڑکا ہے تو وہ اپنی پہلی رات کا بتائے کہ اس نے کیا باتیں کی کیا تحفہ دیا کیسے بیوی کی شرماہٹ کو ایک کنارہ رکھتے ہوئے اسے سیکس پر رضامند کیا.  کیسے کیا کپڑے کیسے اتارے.  آیا وہ بیوی کی امید پر پورا اترا یا نہیں. 

جو دوست یہاں پر ایک دوسرے کو جانتے ہیں وہ بھلے اپنا نہ بتائیں میرے خیال سے اکثر ایک دوسرے کو نہیں جانتے تو پرائیویسی کا مسئلہ نہیں ہوگا.  اگر پھر بھی کوئ نہیں چاہتا تو کوئ مسئلہ نہیں .

 

دوسرا حصہ 

دوست / رشتہ دار کال گرل کے ساتھ  سیکس : جودوست شادی شدہ نہیں ہیں یہ حصہ ان کے لیے ہیں. آپ نے کسی دوست کےساتھ سیکس کیا, رشتہ دار کے  ساتھ یا کسی کزن کے ساتھ وہ آپ کے اسکول میں بھی ہوسکتے ہیں محلہ میں بھی . محلہ میں آپ کے پڑوس کے ساتھ سیکس.  آفس میں ہیں تو باس کے ساتھ.  ہسپتال میں تو مریض کا نرس کے ساتھ.  ڈاکٹر کا مریض کےساتھ یا نرس کے ساتھ 

اگر کوئ ٹیچر ہے اس نے کوشش کی یا آپ کا دل چاہا اس کا لکھیں.  ٹیوٹر کےساتھ. رشتہ داروں میں کزنز کے ساتھ جو کہ بہت عام ہیں اس کا بتائیں. 

لڑکا /مرد ہے تو وہ لڑکی /عورت کے بارے میں بتائے اگر لڑکی/عورت ہے تو وہ مرد/ لڑکے کے بارے میں بتائے . زندگی کے جس بھی شعبہ سے آپ کا تعلق ہے آپ ان واقعات کو حقیقت کے مطابق قلم بند کریں.  سچے اور حقیقی کیسے بات کی کیسے راضی کیا سیکس کہا کیا کسی پارک میں یا کمرہ میں کبھی کسی نے پکڑ تو نہیں لیا. وغیرہ .  کال گرل کے ساتھ سیکس کا بالکل آخر میں.  اور پلیز کال گرل کا بتاتے وقت خیال رکھیں کہ کوئ خاص جگہ کا نام نہ لیں ورنہ یہاں پھر ایک دوسرے سے پتا مانگنے لگ جائیں گے. 

جو دوست شادی شدہ ہیں وہ بھی اپنے کسی دوست کزنز کا بتاسکتے ہیں کہ جو شادی شدہ ہونے کے بعد بھی انجوائے کررہے ہیں. جو نہیں بتانا چاہتے وہ بھلے بس ڈسکشن میں حصہ لیں.  جن سے سیکس نہیں ہوسکا صرف چھیڑ چھاڑ ہوئ وہ بھی بتاسکتےہیں. کسی کا اپنی بہن کی دوست کے ساتھ سیکس سین ہوگیا وہ بتائیں.  کئ بار دو بہنیں مل کر باہر اپنے دوست بناتی ہیں ان کا بتائیں.  جس بھی اور کسی بھی قسم کے واقعات ہوئیں وہ یہاں ذکر کریں تفصیل کےساتھ

گزارش ہے کہ پوسٹس اردو فونٹ میں لکھیں

جو ایکٹو ممبرز ہیں وہ تو لازماً بتائیں اور سب کو دعوت عام ہیں 

امید ہے آپ احباب اس میں حصہ لیں گے.  جتنی بھی اسٹوریز چل رہی ہیں ان کی شیڈول اپڈیٹ کا ٹائم ہے تو بار بار اپڈیٹ اپڈیٹ کی رٹ لگانے کے بجائے یہاں اپنے واقعات بتا کر سب کو مزے دار تفریح کا موقع فراہم کریں. اور بھی جو تھریڈز ہیں ان میں بھی حصہ لیں 

شکریہ 

Share this post


Link to post
Share on other sites

اردو فن کلب کے پریمیم ممبرز کے لیئے ایک لاجواب تصاویری کہانی ۔۔۔۔۔ایک ہینڈسم اور خوبصورت لڑکے کی کہانی۔۔۔۔۔جو کالج کی ہر حسین لڑکی سے اپنی  ہوس  کے لیئے دوستی کرنے میں ماہر تھا  ۔۔۔۔۔کالج گرلز  چاہ کر بھی اس سےنہیں بچ پاتی تھیں۔۔۔۔۔اپنی ہوس کے بعد وہ ان لڑکیوں کی سیکس سٹوری لکھتا اور کالج میں ٖفخریہ پھیلا دیتا ۔۔۔۔کیوں ؟  ۔۔۔۔۔اسی عادت کی وجہ سے سب اس سے دور بھاگتی تھیں۔۔۔۔۔ سینکڑوں صفحات پر مشتمل ڈاکٹر فیصل خان کی اب تک لکھی گئی تمام تصاویری کہانیوں میں سب سے طویل کہانی ۔۔۔۔۔کامران اور ہیڈ مسٹریس۔۔۔اردو فن کلب کے پریمیم کلب میں شامل کر دی گئی ہے۔

جناب بہت اچھا آئیڈیا سوچا ہے۔مگر وہی ڈھاک کے تین پات۔

اصل بات تو لوگوں کی شرکت ہے

مگر ہم لوگ تو دو جملوں کا  تبصرہ  بھی نہیں کرسکتے۔

واقعات کون شئیر کرے گا

اپ نے بھی تھریڈ سٹارٹر ہونے کے باوجود اس تھریڈ میں کوئی شیرنگ  نہیں کی۔

حالانکہ یہ اصول ہے کہ  جو تھریڈ بناتا ہے وہی آغاز بھی کرتا ہے۔

جو جو سوال آپ نے پوچھیں ہیں ان کا جواب تو عنایت فرمائیں؟

 

 

 

 

Share this post


Link to post
Share on other sites

بجا فرمایا آپ نے.  کل میری طبیعت ٹھیک نہیں تھی اس لیے کوئ واقعہ شیئر نہیں کرسکا. جلد ہی پوسٹ کرتا ہوں .

بات یہ ہے کہ اگر ہر کوئ حصہ ڈالے گا تو مزہ آئے گا.  کوشش تو ہے کہ دوست احباب اپنی انگلیوں کو حرکت دیں. 

Share this post


Link to post
Share on other sites
On 10/15/2019 at 8:27 AM, Parvez said:

بجا فرمایا آپ نے.  کل میری طبیعت ٹھیک نہیں تھی اس لیے کوئ واقعہ شیئر نہیں کرسکا. جلد ہی پوسٹ کرتا ہوں .

بات یہ ہے کہ اگر ہر کوئ حصہ ڈالے گا تو مزہ آئے گا.  کوشش تو ہے کہ دوست احباب اپنی انگلیوں کو حرکت دیں. 

اول خویش  بعد درویش

جناب من تھوڑا لکھے کو زیادہ جانیے۔

اور پہلے خود آغاز کیجئے۔

کچھ تھریڈ میں جان ڈالیے۔

پھر لوگوں کی انگلیوں کا گلہ کیجیے

Share this post


Link to post
Share on other sites

میری زندگی میں بہت سارے واقعات ہیں مگر کونسا سنایا جائے اور کونسا نہیں یہ فیصلہ کرنا مشکل کام ہے۔ مگر قریب قریب سبھی ایک جیسے ہیں۔

کئی بار کامیاب ہوا، کئی بار ناکام ہوا، کئی بار پکڑا گیا تو کئی بار بال بال بچ گیا۔ کسی پہ ٹرائی کی تو ناکامی ہوئی مگر جس پہ کی ہی نہیں تھی اس پہ کامیاب ہو گئی۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

کچھ سال پہلے کا واقعہ ہے.  غالباً 2016کا . میرے ایک دوست کے پاس ایک عورت آئ.  اپنے بچوں کی مدد کے سلسلے میں.  میاں سے تنگ تھی.  شایدکام کاج نہیں کرتا ہوگا.  . دوست کی پہلی ملاقات تو سرسری ہوئ.  دوسری ملاقات میں میں ساتھ تھا. یہ دوست میرا یہ سمجھو کہ یار تھا یار. . اس نے دوسری ملاقات میں عورت کے ذہن میں ڈال دیا کہ میرے دوست میں اور مجھ میں کوئ فرق نہیں ہم ایک دوسرے کا آئینہ ہیں.  کسی حد تک اس نے تسلیم بھی کرلیا.  میرے سامنے میرے دوست نے اس کا ہاتھ پکڑا اور چوم لیا اس کی شرم ختم کرنے کے لیے.  دوست نے مجھے کہا کہ اسے گھر کے قریب چھوڑ دو. میں نے اسے بایئک پر بٹھالیا باتیں ہوتی رہیں, میں نے اس سے نمبر لے لیا اور اپنا نمبر دے دیا.  قائد آباد اسے چھوڑا رکشہ پر بٹھایا اور کرایہ دے دیا.  محبت کی ترسی ہوئ لگ رہی تھی.  پھر فون پر باتیں ہوتی رہیں. میاں کی جب بھی بات کی تو ہمیشہ بات ٹال دیتی. آہستہ آہستہ سیکس پر بھی بات آگئ.  لگتا نہیں تھا کہ سیکس کرنے دیگی.  عورت ذات کو سمجھنا بڑا مشکل ہے. 

اگلی ملاقات اس عورت سے میرے دوست کی جگہ پر ہوئ.  اس دوران میرے دوست نے اس سے کوئ رابطہ نہیں رکھا.  جب جگہ پر آگئ تو باتیں وغیرہ ہوئیں.  پہلی بار اس نے نقاب اتارا.  ورنہ پہلی ملاقات میں نقاب میں ہی تھی.  شکل  گہرا سانولا تھا قد مناسب تھا نہ موٹی نہ پتلی.   میں اس کے قریب بیٹھ کر بات کررہا تھا بات کرتے کرتے میں نے  نے اسے کہا اپنا ہاتھ دکھاؤ.  اس نے اپنا ہاتھ میرے ہاتھ میں دیا.  جیسے ہی میرا ہاتھ اس کے ہاتھ میں آیا تو اس نے میرے ہاتھ کو زور سے دبایا. اس کے ہاتھ کا دبانا تھا کہ سمجھو میری رگوں میں کرنٹ دوڑ گیا لنڈ میرا انتہائ سخت ہوکرکھڑا ہوگیا.  اس دوران مجھے دوست کو کال کرنی تھی جو اوپر کے پورشن میں موجود تھا.  میں کال کرنے کے لیے کھڑا ہو تو اس نے میرے کھڑے لنڈ کو دیکھ لیا . بات ختم کرکے اس سے کہا کہ آؤ کمرہ میں چلتے ہیں.  اس کے ہاتھ دبانے سے میں سمجھ گیا کہ یہ سیکس کے لیے راضی ہے اور بے تاب بھی.  اندر لے جاکر کرسی پر بیٹھ گئے.  بات کے ساتھ ہی اس کے ہاتھ تھام کر چوم لیے. اس نے منع نہیں کیا.  ہاتھوں کو سہلاتے سہلاتے اس کے گال پر کس کی.  اس دوران میں شہوت کے ہاتھوں مجبور ہوکر بے تابی سے چومنے لگا اور مسلنے لگا اس کے شلوار کے پانچے سے میں نے اندر ہاتھ ڈالا تو اس سے کہا کہ آرام سے آرام سے 

میں اس کے بعد اسے لے کر نیچے آگیا اور لٹاکر بوسوں کی بارش کردی. اس کے ساتھ پھر لیٹ گیا اور چومتے کسنگ کرتے ہوئے اس کے مموں کوپکڑ لیا. آہ ہ ہ ہ ممے تو میری سب سے بڑی کمزوری ہیں.  ممے اس کے شادی شدہ اور بچے ہونے کے باوجود بھی اتنے ڈھلے نہیں ہوئے تھے. مموں کو مسلتا رہا مسلنے کے ساتھ ساتھ میں نے اس کی قمیض اوپر کرکے پیٹ ننگا کردیا.  پیٹ اس کا بالکل برابر تھا. پیٹ کو میں چومتا رہا. پھر میں نے اس کی قمیض اتار دی شروع میں اس نےجھجک دکھائ لیکن مان گئ پھر.  قمیض کے ساتھ ہی شلوار بھی اتار دی.  اس نے کہا کہ مجھے تو ننگا کردیا اپنے بھی تو کپڑے اتارو.  میں نے بھی اپنے کپڑے اتار دیے.  وہ گہرا رنگ ہونے کے باوجود صاف ستھری تھی. چوت بھی صاف شفاف تھی.  میں پھر اس کو مسلسل چومتا چاٹتا رہا. مموں کو جی بھر کر چوسا. کبھی گال پر کس کبھی مموں پر کبھی پیٹ پر.پھر اس نے کہا کہ کچھ نہ کرو میرے اوپر لیٹ جاؤ.  میں کوئ پندرہ بیس منٹ بس اس کے اوپر لیٹا رہا.  ہر لڑکی کو اپنا مزہ لینے کا الگ طریقہ ہوتا ہے شاید اس میں اسے زیادہ مزہ آرہا تھا .لنڈ میرا تنا ہوا تھا.  ڈر لگ رہا تھا کہ ایسے ہی فارغ نہ ہوجاؤں کیوں کہ اس طرح سینہ سے سینہ جسم کا ہر حصہ جسم سے ٹچ ہو لنڈ چوت سے لگ رہا ہو تو جذبات پر قابو رکھنا بہت مشکل ہوتا ہے .خیر میں اٹھا.  لنڈ پر کنڈم چڑھایا.  کنڈم دیکھ کر وہ بہت خوش ہوئ.  لنڈ کو اس کی چوت پر رکھا اور ڈال دیا,  . توقع کے خلاف اس کی چوت تنگ تھی.  جس پر مجھےحیرت ہوئ کیوں کہ اس کے تین سے چار بچے تھے.  چار سے پانچ جھٹکے دیے اور نکال لیا.  کیوں کافی دیر رومانس کرتا رہا تو جذبات انتہائ عروج پر تھے.  پھر ممے جسم چومنے لگ گیا.  پھراندر ڈالا تو اس نے کہا کہ اندر ڈلے رہنے دو تو کچھ دیرمیں نے ایسے ہی اندر رکھا.  . پھر نکال کر چار پانج جھٹکے دیے.  پھر اسی طرح اس کے گال چومے مموں کو چوما اور پورے جسم کو چوما.  اس کے بعد اندر ڈال کر مسلسل جھٹکے مار کر فارغ ہوگیا.  آہ  ہ ہ ہ ہ.  بڑا پر لطف سیکس تھا. انتہائ مزہ آیا. اس نے بھی بھرپور انجوائے کیا.  

سیکس کے دوران میں نے اسے بڑی منانے کی کوشش کی,  کہ دوست کو بلا لیتا ہوں تاکہ مل کر ایک ساتھ کریں. آخر کو اس کے توسط سے مجھے چوت ملی تھی. 

دوست اوپر والے پورشن میں بیٹھ کر لیپ ٹاپ استعمال کرتا رہا. . عورت کی عمر کے بارے میں بتاتا چلوں کہ اندازاً  35 سال کے آس پاس ہوگی, ممے 34کے ہوں گے کولہے بھی مناسب تھے .  شوہر اس کا ناکارہ تھا کماتا نہیں تھا.  جس طرح سے اس نے پہلی ملاقات میں جسم دے دیا تو اسے ایک دوست کی تلاش تھی جو اسے سمجھے جس کامیں نے بہت حد تک ازالہ کیا.  جب لنڈ سے کنڈم اتارا تو بڑے غور سے آکر لنڈ کو دیکھنے لگی ہا ہا.. 

اس کو جو مددچاہیے تھی اس کی مدد کی . وہ محبت اور سیکس کو بہت ترسی ہوئ تھی. 

یہ تھا میرا پہلا واقعہ . آپ لوگوں کے کمنٹس کا انتظار رہے گا. 

Share this post


Link to post
Share on other sites
On 10/16/2019 at 2:16 PM, Cutesmile said:

Abi app ne urdu font wali bat ki jin ko urdu me nehi likhna ata wo kiya kary

اگر اردو میں نہیں لکھ سکتے تو ٹھیک ہے رومن میں لکھ دیں 

23 hours ago, airborne said:

اول خویش  بعد درویش

جناب من تھوڑا لکھے کو زیادہ جانیے۔

اور پہلے خود آغاز کیجئے۔

کچھ تھریڈ میں جان ڈالیے۔

پھر لوگوں کی انگلیوں کا گلہ کیجیے

جی جناب آپ نے ٹھیک کہا,  میں نے آغاذ کردیا ہے. 

Share this post


Link to post
Share on other sites
11 hours ago, DR KHAN said:

میری زندگی میں بہت سارے واقعات ہیں مگر کونسا سنایا جائے اور کونسا نہیں یہ فیصلہ کرنا مشکل کام ہے۔ مگر قریب قریب سبھی ایک جیسے ہیں۔

کئی بار کامیاب ہوا، کئی بار ناکام ہوا، کئی بار پکڑا گیا تو کئی بار بال بال بچ گیا۔ کسی پہ ٹرائی کی تو ناکامی ہوئی مگر جس پہ کی ہی نہیں تھی اس پہ کامیاب ہو گئی۔

ڈاکٹر صاحب آپ سے گزارش ہے کہ آپ جس میں کامیاب ہوئے,  جس میں ناکام ہوئے,  جس میں پکڑے گئے اور جس میں بال بال بچے ان سب کا ایک ایک واقعہ سنادیں.

مجھے معلوم ہے آپ کی مصروفیات زیادہ ہیں.  سب سے پہلے آپ کی لائف پھر اسٹوریز کا سلسلہ.  ان سب کے بعد وقت بچے تو اپنے حقیقی واقعات سے ہمیں ضرور لطف اندوز کریں .

آپ کے قلم کے لکھے ہوئے کا الگ ہی مزہ ہوگا.

العارض 

پرویز

Share this post


Link to post
Share on other sites

پرویز صاحب۔یہ ہوئی نہ بات۔

میں  بھی  وقت ملتے ہی کچھ واقعات شییر کروں گا

Share this post


Link to post
Share on other sites

Please sign in to comment

You will be able to leave a comment after signing in



Sign In Now

×
×
  • Create New...