Jump to content
URDU FUN CLUB
Sign in to follow this  
Horny Jasmin

مجھے حادثوں نے سجا سجا کے بہت حسیں بنا دیا

Recommended Posts

On 9/13/2011 at 5:29 PM, Horny Jasmin said:

 

آداب آپ کو بھول جائیں ہم ، اتنے تو بےوفا نہیں

آپ سے کیا گلہ کریں آپ سے کچھ گلہ نہیں

شیشہِ دل کو توڑنا اُن کا تو ایک کھیل ہے

ہم سے ہی بھول ہوگئی اُن کی کوئی خطا نہیں

کاش وہ اپنے غم مجھے دے دے تو کچھ سکون ملے

وہ کتنا بدنصیب ہے غم ہی جسے ملا نہیں

 

 

Gr8

Share this post


Link to post
Share on other sites

اردو فن کلب کے پریمیم ممبرز کے لیئے ایک لاجواب تصاویری کہانی ۔۔۔۔۔ایک ہینڈسم اور خوبصورت لڑکے کی کہانی۔۔۔۔۔جو کالج کی ہر حسین لڑکی سے اپنی  ہوس  کے لیئے دوستی کرنے میں ماہر تھا  ۔۔۔۔۔کالج گرلز  چاہ کر بھی اس سےنہیں بچ پاتی تھیں۔۔۔۔۔اپنی ہوس کے بعد وہ ان لڑکیوں کی سیکس سٹوری لکھتا اور کالج میں ٖفخریہ پھیلا دیتا ۔۔۔۔کیوں ؟  ۔۔۔۔۔اسی عادت کی وجہ سے سب اس سے دور بھاگتی تھیں۔۔۔۔۔ سینکڑوں صفحات پر مشتمل ڈاکٹر فیصل خان کی اب تک لکھی گئی تمام تصاویری کہانیوں میں سب سے طویل کہانی ۔۔۔۔۔کامران اور ہیڈ مسٹریس۔۔۔اردو فن کلب کے پریمیم کلب میں شامل کر دی گئی ہے۔

On 10/12/2011 at 2:40 PM, Waniya said:

 

مجھے اپنے ضبط پے ناز تھا سرِ بزم رات یہ کیا ہوا

میری آنکھ کیسے چھلک گئی یہ دکھ ہے کہ بُرا ہوا

میری زندگی کے چراغ کا یہ مزاج کوئی نیا نہیں

ابھی تیرگی ہے ابھی روشنی نہ جلا ہوا نہ بجھا ہو ا

مجھے کیوں نہ سمجھ سکے یہ اپنے دل سے ہی پوچھیے

میری داستانِ حیات کا تو ورق ورق ہے کھلا ہوا

مجھے جو بھی دشمنِ جاں ملا وہی پختہ کارِ جفا ملا

نہ کسی کی ضرب غلط پڑی نہ کسی کا وار خطا ہوا

مجھے راستے میں پڑا ہوا کسی بد نصیب کا خط ملا

کہیں خونِ دل سے لکھا ہوا کہیں آنسؤوں سے مٹا ہوا

جو نظر بچا کے گذر گئے میرے سامنے سے ابھی ابھی

یہ میرے شہر کے لوگ ہیں میرےگھر سےگھر ہے مِلا ہوا

مجھے ہمسفر بھی ملا تو ستم طریف میری طرح

کئی منزلوں کا تھکا ہوا کہیں راستوں کا لُٹا ہوا

میرے اِک گوشہ فِکر میں میری زندگی سے عزیز تر

میرا اک ایسا بھی دوست ہے جو مِلا کبھی نہ جدا ہوا

 

Behtreen

Share this post


Link to post
Share on other sites
On 8/6/2015 at 10:51 AM, red-flowersss said:

اس کے اوصاف و سیرت نے مجهے جیت لیا غالب

میرے مریدوں میں وہ اک شخص تها پیروں جیسا

Zabardast yaaarrr...

Share this post


Link to post
Share on other sites
On 8/6/2015 at 10:52 AM, red-flowersss said:

جس کے خواھش ھے کے صحرا کے سمندر
دیکھے اک نظر آ کے----میرے آنکھ کے اندر دیکھے

جون غم کے ہجوم سے نکلے....... اور جنازہ بھی دھوم سے نکلے 
اور جنازے میں ہو یہ شورِ حزیں آج وہ مر گیا جو تھا ہی نہیں
جون ایلیاء

Share this post


Link to post
Share on other sites
On 8/6/2015 at 1:50 PM, Young Heart said:

بہت خوب

 

میں کیا بتاؤں اے جانِ جاناں  وہ راز ان مسکراہٹوں کے

یقین جانو تو قہقہوں میں ہزاروں آنسو چھپے ہوئے ہیں
 

nice 

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now
Sign in to follow this  

×
×
  • Create New...